Istikhara (استخارہ) - Slunečnice.cz Hlavní navigace

 Istikhara (استخارہ) 1.0.1

Pro hodnocení programu se prosím nejprve přihlaste

Staženo 0 ×
Zdarma

Sdílet

Allah tala ke kurb ka ek zaria istekhara hai. Jo banda istekhara karta hai, wo allah tala ke kurb ko pata hai or uss kurb ko mahsoos karta hai. Jo jis kadar jyada istekhara karta hai, usi kadar allah ke jyada kareeb hota chala jata hai. Kareeb bahoot hi kareeb, behad kareeb. Yaha tak ki uska dil, uski akhian, orr uske azaa usse bhar jaate hai, roshan hoo jate hai. bus ek baat yaad rakhe, ki ye saare fhayede istekhara karne ke hai, istekhara karwane ke nahi. Wo log jo muslim ho kar doosro se istekhara karate hai, malooom nahi ki unke soch kya hote hai, kya wo khud allah tala se nahi mangna chahate. yaa wo khud ko allah tala se door samajte hai. Agar door samajte hai to kya kareeb nahi hona chahate. Allah tala ke nabi sallallahu alaehi wasallam ne sahaba ikram ko istekhara sikhaya, bahut hi ektemaam ke saath, bahut hi taqeed ke sath, taki har koi khod istekhara kare. Yhi hukm umat ky har frd ky ley hy.

اللہ تعالیٰ کے ’’قُرب‘‘کا ایک اہم ذریعہ ’’استخارہ‘‘ ہے…جو بندہ ’’استخارہ‘‘ کرتا ہے وہ اللہ تعالیٰ کے ’’قرب‘‘ کو پاتا ہے اور اس ’’قرب‘‘ کو محسوس کرتا ہے… پھر جو جس قدر زیادہ استخارہ کرتا ہے اسی قدر اللہ تعالیٰ کے قریب ہوتا چلاجاتا ہے… قریب،بہت قریب،بے حد قریب … یہاں تک کہ اس کا دل،اس کی آنکھیں اور اس کے اعضاء ’’نور‘‘ سے بھر جاتے ہیں،روشن ہو جاتے ہیں… بس ایک بات یاد رکھیں یہ سارے فائدے ’’استخارہ‘‘ کرنے کے ہیں…استخارہ کرانے کے نہیں…وہ لوگ جو مسلمان ہوکر دوسروں سے ’’استخارہ‘‘ کراتے ہیں…معلوم نہیںاُن کی سوچ کیا ہوتی ہے…کیا وہ خود اللہ تعالیٰ سے نہیں مانگنا چاہتے؟کیا وہ خود کو اللہ تعالیٰ سے دور سمجھتے ہیں؟…اگردور سمجھتے ہیں توکیا قریب نہیں ہوناچاہتے؟اللہ تعالیٰ کے نبیﷺ نے حضرات صحابہ کرام کو …استخارہ سکھایا … بہت اہتمام کے ساتھ،بہت تاکید کے ساتھ… تاکہ ہرکوئی خود ’’استخارہ‘‘کرے…یہی حکم اُمت کے ہر فرد کے لیے ہے…

Hazrat aaqa madni sallallahu alehi wassalam ne apne jaame alfaaz me har baat sikha di. maslan:
1. Istekhara har kaam me hai, sirf shaadi wagairah barey kaamo ke liye nahi
2. Istekhara sirf taraddud ke waqt nahi, balki jab bhi kisi kaam ka irada ho, usme taraddud ya na ho, allah tala se khair mang lo, ki yaa allah! khair hai too ho jai khair nahi to muje is se bacha lijiye.
3. Doo rakat farz ke alawa ada karni hai yaani doo rakat nafal ada karo.
4. Doo rakat ke baad istekhara ki dua padhni hai or apni hajat ka name lena hai.

حضرت آقا مدنی ﷺ نے اپنے جامع الفاظ میں استخاہ کی ہر بات سکھا دی… مثلاً

(۱) استخارہ ہر کام میں ہے… صرف شادی وغیرہ بڑے کاموں کے لئے نہیں

(۲) استخارہ صرف تردد کے وقت نہیں… بلکہ جب بھی کسی کام کا ارادہ ہو… اس میں تردد ہو یا نہ ہو اللہ تعالیٰ سے خیر مانگ لو کہ… یا اللہ خیر ہے تو ہو جائے خیر نہیں تو مجھے اس سے بچالیجئے…

(۳) دو رکعت فرض کے علاوہ ادا کرنی ہے…یعنی دو رکعت نفل ادا کرو…

(۴) دو رکعت کے بعد استخارہ کی دعاء پڑھنی ہے… اور اپنی حاجت کا نام لینا ہے…

Pro hodnocení programu se prosím nejprve přihlaste

Staženo
0 ×

TIP: Stahují se vám programy pomalu? Změřte si rychlost svého internetového připojení.